27 ستمبر 2021
تازہ ترین

گورنر پنجاب کی فقیدالمثال خدمات گورنر پنجاب کی فقیدالمثال خدمات

اللہ تعالیٰ نے اس دنیا میں کچھ ایسے افراد کا انتخاب کیا ہوتا ہے جو اس کے بندوں کو آرام پہنچانے کے لئے اپنا آرام تج دیتے ہیں۔ ان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ صرف اللہ کے ان غریب بندوں کی مدد کریں، جن کی کوئی مدد کرنے کے لئے تیار نہیں ہوتا۔ یہ انسانیت کی خدمت کے لئے ہر میدان میں آگے آگے ہوتے ہیں۔ یہ سیاست کے میدان میں ہوں یا کسی اور شعبے میں، ان کی زندگی کا مقصد عوام کی صرف خدمت ہوتا ہے۔ پنجاب پر خاص کرم ہوا کہ گورنر پنجاب چوہدری سرور کی صورت پنجاب کی خدمت کرنے کے لئے ایک ایسا بندہ تعینات ہوا، جس کے دن رات پنجاب بلکہ پاکستان کے عوام کی خدمت میں گزر رہے ہیں۔ سیاست، تعلیم، صاف پانی، بین الاقوامی یا قومی سیاست آپ کو ہر میدان میں گورنر پنجاب چوہدری سرور اپنی خدمات پیش کرتے نظر آئیں گے۔ پنجاب کی گڈ گورننس میں آپ کو چوہدری محمد سرور کا ہاتھ نظر آئے گا۔ انہوں نے پنجاب میں تحریک انصاف کی ساکھ بنانے کے لئے دن دیکھا اور نہ رات۔ اگر آج پنجاب میں پی ٹی آئی مضبوط نظر آرہی ہے تو اس کے پیچھے بھی گورنر پنجاب چوہدری سرور ہی نظر آئیں گے۔ آپ تحریک انصاف کی پنجاب میں آپسی چپقلش سے بہت زیادہ افسردہ نظر آتے ہیں۔ تحریک انصاف کے آپسی اتحاد اور حکومتی گورننس کو بہتر کرنے کے لئے ہر پلیٹ فارم پر کام کرتے دِکھائی دیتے ہیں۔ صحافی، بزنس مین، سیاست دان اور عوام آپ پر اعتماد کرتے نظر آتے ہیں۔ اس وقت گورنر پنجاب جو عوامی سطح پر کام کررہے ہیں، وہ کسی اور کے بس میں نظر نہیں آتا، اس لئے وزیراعظم کو ان پر اعتماد ہے کہ ان کو کھل کر کھیلنے کی اجازت دے دینی چاہیے، تاکہ پنجاب کی سطح پر تحریک انصاف مضبوط سے مضبوط تر ہوجائے۔ آج سے تین برس قبل چوہدری محمد سرور نے بطور گورنر پنجاب اپنی ذمے داریاں سنبھالیں، پنجاب کی تمام یونیورسٹیز میں میرٹ، آب اتھارٹی کا قیام، کارکنوں اور عوام کے لئے گورنر ہاؤس کے دروازے کھولنے، کرونا وبا میں غریبوں کے ساتھ کھڑے ہونے سیمت ہر دن عوامی خدمت کی مثال قائم کی۔ پنجاب کے گورنر چوہدری محمد سرور جو اس وقت تمام میڈیکل اور عام یونیورسٹیوں کے چانسلر ہیں، نے محکمۂ صحت کو بے مثال سرپرستی فراہم کی اور کرونا وبا کی روک تھام میں تعاون کیا۔ راشن کی فراہمی سے لے کر ادویہ اور وینٹی لیٹرز کی دستیابی تک، وہ اداروں اور ہسپتالوں کی سرپرستی کرتے رہے۔ ان کا مثالی کام جس کی پوری دنیا نے تعریف کی، وہ ٹیلی میڈیسن سروسز کا موثر آغاز تھا، جو 18 مارچ 2020 کو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی لاہور میں ہوا۔ اس کے بعد اس کی فعالیت کو دیکھتے ہوئے کرونا ہیلپ ڈیسک پر مشتمل فعال ٹیلی سینٹرز پنجاب کی تمام یونیورسٹیوں میں قائم کیے گئے۔ کرونا وبا کے دوران جب لاک ڈائون کی وجہ سے لوگ ہسپتال اور ڈاکٹروں کے پاس نہیں پہنچ پارہے تھے، تو ٹیلی میڈیسن تمام مریضوں کے لئے رابطے کا سب سے موثر ذریعہ ثابت ہوا، لاکھوں افراد نے اپنے گھروں میں بیٹھے ہوئے  اس سہولت سے استفادہ کیا۔ کشمیر کا مسئلہ ہو یا بین الاقوامی معاملہ، چوہدری سرور نے ہمیشہ اس پر بات کی۔ گزشتہ دنوں انہوں نے اپنے پیغام میں کہا کہ بھارت امن کا سب سے بڑا دشمن، دہشت گردوں کا سہولت کار ہے، افغانستان میں امن بھی بھارت سے برداشت نہیں ہورہا، سازشیں کررہا ہے۔ پاکستان دنیا میں بھارتی دہشت گردی اور کشمیریوں پر مظالم کو بے نقاب کررہا ہے، بھارت مسلمانوں کے خلاف جرائم، اسلاموفوبیا کو فروغ دے رہا ہے، جس کے بعد پاکستان اقلیتوں کے لئے محفوظ، بھارت خطرناک ترین ملک بن چکا۔ کشمیریوں کے ساتھ بھارتی افواج کا شرم ناک سلوک بنیادی انسانی حقوق کا قتل ہے، 22 کروڑ پاکستانی کشمیریوں کے ساتھ اور کسی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔ بھارت افغانستان میں قیام امن کی کاوشوں کو سبوتاژ کرنا چاہتا ہے، بھارت کی ہندوتوا سوچ کے باعث خطے کو شدید خطرات ہیں، دنیا کے سامنے بھارت سرکار کا اصل چہرہ سامنے لارہے ہیں، کشمیریوں کو بھارتی استبداد سے نجات دلانے کے لئے دنیا کردار ادا کرے۔ گورنر پنجاب کو جہاں پنجاب کی فکر ہے تو وہیں وہ پورے پاکستان کے لئے کام کرتے نظر آرہے ہیں۔ جب گزشتہ ماہ  بلوچستان میں بڑھتے ہوئے  ہیپاٹائٹس کے مرض کو دیکھتے ہوئے گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے کوئٹہ میں بلوچستان فری ہیپا ٹائٹس پروگرام کا افتتاح کیا اور اس کے بعد گورنر پنجاب نے آئی جی بلوچستان، گورنر بلوچستان اور ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی سے ملاقات کی اور بلوچستان کے عوام کی خدمت کرنے پر زور دیا۔ گورنر پنجاب چوہدری سرور نے ایک این جی او کے ساتھ مل کر بلوچستان ڈویلپمنٹ نیٹ ورک بھی قائم کردیا، جس کے تحت بلوچستان کو جدید سہولتوں سے آراستہ کیا جائے گا۔ گورنر پنجاب کا کہنا تھا کہ بلوچستان کی ترقی اب ہمارا مشن ہے۔ اگر زمینی حقائق کو دیکھا جائے تو گورنر پنجاب نے صوبے کے لئے وہ مثالی کام کیا ہے، جس کی نظیر پنجاب کی تاریخ میں نہیں ملتی۔ انہوں نے ایک این جی او کے ساتھ تاریخی معاہدہ کیا ہے، جس کے تحت پنجاب میں 7.5 ملین خاندانوں کو پینے کا صاف پانی ملے گا۔ پنجاب آب اتھارٹی گورنر پنجاب کی زیر قیادت اپنے فلٹر پلانٹس سے دسمبر 2021 تک قریباً 8 ملین افراد کو صاف پینے کا پانی فراہم کرے گی، جو گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کا ایسا کام ہے، جس کو تاریخ صدیوں یاد رکھے گی۔