05 دسمبر 2021
تازہ ترین

دبئی ایکسپو 2020، پنجاب کی شاندار نمائندگی دبئی ایکسپو 2020، پنجاب کی شاندار نمائندگی

دبئی ایکسپو 2020 اس وقت پوری دنیا کی توجہ کا مرکز ہے۔ متحدہ عرب امارات نے اسے دنیا کا سب سے بڑا ثقافتی میلہ قرار دیا ہے، جو یکم اکتوبر 2021 سے 31 مارچ 2022 تک جاری رہے گا۔ اس کا انعقاد گزشتہ برس ہونا تھا، لیکن کرونا کے باعث اسے ملتوی کردیا گیا۔ دبئی ایکسپو میں دنیا کے 192ممالک شرکت کررہے ہیں۔ متحدہ عرب امارات نے دبئی کے ایک بڑے حصے کو نمائش کے لئے مختص کیا ہے اور ہر ملک کے الگ الگ پویلین بنائے گئے ہیں۔ پاکستان پویلین سب سے زیادہ وزٹ کیے جانے والے پویلینز میں شامل ہے۔ ماہِ نومبر پنجاب کے لئے مختص تھا۔
پاکستان میں انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجیز (ICT) کے فروغ میں پنجاب کا کردار انتہائی اہم ہے۔ اس ضمن میں پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کے وضع کردہ سٹارٹ اپس پنجاب پورٹل کے ذریعے منتخب کردہ سٹارٹ اپس نے پنجاب کی نمائندگی کی۔ دبئی ایکسپو 2020 میں پنجاب انٹرنیشنل بزنس کانفرنس کا انعقاد کیا گیا، جس میں پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ نے انٹرپرینیور شپ اور سرمایہ کاری کے فروغ کے لئے پاکستان بزنس کونسل دبئی اور پاکستان اوورسیز کمیونٹی گلوبل کے ساتھ دو مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کیے۔ پنجاب انٹرنیشنل بزنس کانفرنس کے دوران پی آئی ٹی بی کے وضع کردہ سٹارٹ اپ پنجاب پورٹل کا بھی افتتاح کیا گیا جب کہ پنجاب کے 20 منتخب سٹارٹ اپس نے منفرد آئیڈیاز عالمی سرمایہ کاروں کے سامنے پیش کیے۔ تقریب میں پاکستان کے دبئی میں سفیر افضال محمود، وزیر ہائر ایجوکیشن و آئی ٹی پنجاب راجہ یاسر ہمایوں، وزیر صنعت، تجارت و سرمایہ کاری پنجاب میاں اسلم اقبال، وزیر خزانہ پنجاب ہاشم جواں بخت، چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر منظور اور ڈی جی ای گورننس پی آئی ٹی بی ساجد لطیف سمیت اہم شخصیات نے شرکت کی۔ عالمی سرمایہ کاروں نے صوبائی وزیر راجہ یاسر، چیئرمین اظفر منظور اور اسٹارٹ اپس سے ملاقات میں سٹارٹ اپس کے بزنس آئیڈیاز اور معیار کو سراہا اور تعاون میں گہری دلچسپی ظاہر کی۔
 اس موقع پر راجہ یاسر ہمایوں نے کہا کہ دبئی ایکسپو میں پنجاب کے سٹارٹ اپس کو ٹیکنالوجی پر مبنی سروسز اور آئیڈیاز کو بہترین انداز میں پیش کرنے کا موقع ملا جب کہ پورٹل سے سٹارٹ اپس اور بین الاقوامی اسٹیک ہولڈرز کے درمیان روابط کے قیام اورآئی سی ٹی انڈسٹری کے فروغ میں مدد ملی۔ راجہ یاسر ہمایوں نے کہا کہ دبئی ایکسپو میں پنجاب کی نمائندگی کے حوالے سے پی آئی ٹی بی کا کردار قابل تحسین ہے۔ چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر منظور نے کہا کہ پی آئی ٹی بی انٹرپرینیور شپ کے فروغ کے لئے جدت پر مبنی متعدد منصوبوں پر عمل پیرا ہے۔ اس سے نوجوانوں کو روزگار کے حصول میں مدد ملی ہے اور وہ گھر بیٹھے زرمبادلہ کمارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دبئی میں شرکت کا مقصد اپنے آئی سی ٹی سیکٹر کو دنیا کے سامنے متعارف کروانا ہے، تاکہ پنجاب میں سرمایہ کاری اور ٹیکنالوجی کو فروغ حاصل ہوسکے۔
پنجاب کے 20 سٹارٹ اپس دبئی ایکسپو میں 28 نومبر تک اپنے منفرد کاروباری آئیڈیاز عالمی سرمایہ کاروں کے سامنے پیش کررہے ہیں۔ ایونٹ میں شرکا کو پنجاب میں آئی ٹی کے فروغ کے حوالے سے پی آئی ٹی بی کی وضع کردہ ڈاکیومنٹری بھی دکھائی گئی اور پینل ڈسکشن کا بھی اہتمام کیا گیا، جس میں وزیر راجہ یاسر ہمایوں، چیئرمین پی آئی ٹی بی، چیئرمین پاشا بدر خوشنود، سی ای او انفوٹیک نصیر اختر، منیجنگ ڈائریکٹر IBEX ندیم الٰہی، منیجنگ پارٹنر گلوبل سیمی کنڈکٹر گروپ اور دیگر انڈسٹری ایکسپرٹس شامل تھے۔
پنجاب میں انٹر پرینیورشپ ایکوسسٹم کے فروغ کے لئے پنجاب آئی ٹی بورڈ، پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ اور TEVTA کے اشتراک سے وضع کردہ سٹارٹ اپ پنجاب پورٹل پر اسٹارٹ اپس کی رجسٹریشن کا آغاز یکم اکتوبر کو کردیا گیا تھا۔ یکم اکتوبر کو ارفع ٹاور میں منعقدہ تقریب میں چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر منظور، چیف آپریٹنگ آفیسر TEVTA رائے منظور ناصر، سی ای او پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ ڈاکٹر ارفع اقبال، ڈی جی ای گورننس پی آئی ٹی بی ساجد لطیف، اے ڈی جی پی آئی ٹی بی صائمہ شیخ و دیگر سینئر افسران شریک ہوئے۔ رجسٹریشن کے لئے 
سٹارٹ اپس کو 7 اکتوبر تک اسٹارٹ اپ پنجاب پورٹل پر آن لائن اپلائی کرنے کی ڈیڈلائن دی گئی تھی۔ اس طرح 20 منتخب سٹارٹ اپس کو دبئی ایکسپو میں شریک ہونے اور اپنی سروسز اور آئیڈیاز کو دنیا کے سامنے پیش کرنیکا موقع ملا۔ سٹارٹ اپس نے startup.punjab.gov.pkپورٹل کے ذریعے رجسٹریشن کرائی۔
دبئی ایکسپو میں مختلف ایونٹس کے دوران خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن و آئی ٹی راجہ یاسر ہمایوں کا کہنا تھا کہ پنجاب میں نوجوان آئی ٹی میں مہارت حاصل کر کے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کررہے ہیں۔ موجودہ حکومت نے نوجوانوں کو ترقی یافتہ بنانے اور جدید ٹیکنالوجی سے لیس کرنے کے لئے درجنوں منصوبے شروع کیے ہیں۔ سٹارٹ اپس اپنے آئیڈیا کے ذریعے اپنی اور ملک کی تقدیر بدل سکتے ہیں۔ پاکستان کی 60 فیصد آبادی 30 برس سے کم عمر کے نوجوانوں پر مشتمل ہے۔ نوجوان ٹیکنالوجی کو زیادہ بہتر انداز میں سمجھ سکتے ہیں۔ یہ ملکی مسائل کا حل ٹیکنالوجی کے ذریعے نکال رہے اور اس سے ملک کے لئے زرمبادلہ بھی کمارہے ہیں۔ راجہ یاسر نے کہا کہ سٹارٹ اپس پنجاب پورٹل سے پنجاب کے نوجوانوں کو عالمی سطح پر اپنی خدمات فراہم کرنے کا موقع ملا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کل 311 سٹارٹ اپس نے پورٹل پر آن لائن درخواستیں بھیجیں، جن میں سے 20کو دبئی میں شرکت کے لئے منتخب کیا گیا۔ آئی ٹی انڈسٹری کے تجربہ کار ماہرین نے سٹارٹ اپس کا انتخاب غیرجانبدارانہ انداز میں کیا۔
دبئی ایکسپو میں جن دو اہم یادداشتوں پر دستخط کیے گئے، ان کے مطابق پہلی مفاہمتی یادداشت پاکستان بزنس کونسل دبئی کے ساتھ طے پائی جو غیر منافع بخش تنظیم ہے اور دبئی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری یو اے ای کی سرپرستی میں کام کررہی ہے۔ دوسری مفاہمتی یادداشت پاکستان اوورسیز کمیونٹی گلوبل کے ساتھ طے پائی، جس کا مرکزی سیکریٹریٹ لندن، برطانیہ میں ہے۔ یہ ادارہ سمندر پار پاکستانیوں کی نمائندگی کرتا ہے۔ ایم او یوز پر چیئرمین پی آئی ٹی بی اظفر منظور نے دستخط کیے۔
دبئی ایکسپو 2020 میں سٹارٹ اپ پنجاب پورٹل کے ذریعے منتخب ہونے والے پاکستانی سٹارٹ اپس نے عالمی سطح پر بہت زیادہ توجہ حاصل کی۔ سرمایہ کاروں نے مستقبل میں تعاون میں گہری دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے پاکستان کی نوجوان کمپنیوں کے معیار کی تعریف بھی کی۔ سٹارٹ اپس پنجاب پورٹل کے ذریعے پاکستانی سٹارٹ اپس اور عالمی اسٹیک ہولڈرز کے درمیان گہرے روابط قائم کرنے میں مدد ملی۔ دبئی ایکسپو میں سیمینار، پینل مباحثے اور سٹارٹ اپ Moot کا بھی اہتمام کیا گیا۔ جن سٹارٹ اپس نے دبئی ایکسپو میں اپنی سروسز متعارف کروائیں، ان میں cricflex, Mobokey, Vceela, Poutla Inc, Boltay Haroof, Mytm, Gharpar, BreathIO, Baby Planet, InstaCare, Nearpeer, WRAP, Dastgyr Technologies, Adlytic AI, TheEPO.com, SocialBu, Deutics Global, EyeAutomate, ,Aabshar, EMTEN  شامل ہیں۔