05 دسمبر 2021
تازہ ترین
لینڈ مافیا اور سہولت کاروں کیخلاف سخت ایکشن کا اعلان

لینڈ مافیا اور سہولت کاروں کیخلاف سخت ایکشن کا اعلان

اسلام آبادٜ وزیر اعظم عمران خان نے قبضہ مافیا کے خلاف چونکا دینے والے انکشافات کرتے ہوئے کہا ہے کہ لینڈ ریکارڈ ڈیجیٹلائزیشن کے دوران مزاحمت کا سامنا کرنا پڑا،سیاسی اشرافیہ کی مدد سے لینڈ مافیا نے سرکاری اراضی پر قبضہ کیا، لینڈ مافیا اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا جبکہ لینڈ ریکارڈ کو کمپیوٹرائز کرنے پر سروے میں5ہزار 595ارب کی سرکاری زمینوں پر قبضے سامنے آئے ہیں۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیراعظم نے اپنے ٹویٹ میں بتایا کہ ڈیجیٹل لینڈ ریکارڈنگ کا کام شروع کیا تو ہمیں سخت مزاحمت کاسامنا کرنا پڑا، ای وی ایم کی طرح کیڈیسٹرل میپنگ میں بھی ہمیں مزاحمت کاسامنا کرنا پڑا ۔ وزیرعظم نے کہا کہ لینڈ ریکارڈ کو کمپیوٹرائز کرنے پر قبضہ مافیا کے زیر استعمال سرکاری زمین کے حوالے سے چونکا دینے والے ا نکشافات سامنے آئے ہیں جبکہ لاہور، کراچی اور اسلام آباد میں 5595 ارب روپے کی زمین پر قبضے نکلے ہیں ، سیاسی اشرافیہ اور قبضہ مافیا سرکاری زمینوں پر قابض نکلے ہیں۔ انہوں نے اپنے ٹوئٹس میں مزید کہا کہ سروے میں جنگلات کی 1869 ارب کی زمین قبضہ گروپوں کے زیر استعمال نکلی اور جنگلات کی زمینوں پر لینڈ مافیا کا قبضہ ہے جبکہ پاکستان میں جنگلات کے رقبے میں مزید کمی ہوئی ہے ۔ وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ریلوے کی 307 ارب مالیت کی زمین قبضہ مافیا کے زیر قبضہ نکلی ، نیشنل ہائی وے کی 52 ارب مالیت کی زمین پرقبضے نکلے ہیں ، متروکہ وقف ا ملاک کی 117 ارب روپے کی زمینوں پر قبضے ہیں جبکہ درست کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ حاصل ہونے کے بعد قبضہ مافیا اور ان کے سہولت کاروں کے خلاف سخت ایکشن ہو گا۔


مزید خبریں

عوامی سروے

سوال: کیا آپ کووڈ 19 کے حوالے سے حکومتی اقدامات سے مطمئن ہیں؟